SSUET providing technical and strategic support to HASWA

SSUET support to HASWA
سر سید یونیورسٹی اور ہلیتھ اینڈ سوشل ویلفیئر ایسوسی ایشن کے اشتراک سے خود کار مصنوعی اعضاء کی تیاری کے حوالے سے ہونے والے ایک سیشن کے موقع پر شرکاء کا گروپ فوٹو ۔

Sir Syed University providing technical and strategic support to HASWA for producing automatic prosthetic limbs.

KARACHI, February 26, 2021 – Sir Syed University of Engineering & Technology (SSUET) has joined hands with Healthcare and Social Welfare Association (HASWA) for producing prosthetic limb in low cost. The university is providing technical and strategic support to produce the automatic limb of high quality with lower cost. Sir Syed University had a session at the campus to demonstrate the automatic prosthetic limb, so far developed in collaboration with HASWA. 

Addressing the session, Chancellor Jawaid Anwar said that it is really a tear-jerking experience to see a person with no limbs. However, prosthetic limbs may help him a lot to restore his confidence and make him to become independent. Sir Syed University is working on it to help the needy and deserving persons by joining hands with HASWA to develop a fully automatic prosthetic limb. SSUET strongly support HASWA to help the poorest of the poor. 
On the occasion, Vice Chancellor Prof. Dr. Vali Uddin pointed out that the university is an important part of the society and fills the need of it. We aim to work on different dimensions with other organization and institutions to broaden the horizon. Sir Syed University has a competent and experienced faculty to carry forward the vision of Sir Syed Ahmed Khan to develop a society with healthy norms. Sir Syed University has many engineering technologies under one roof including highly developed IT department. 
 
Akbar Ismail of HASWA, said every human being has a right to a healthy happy life not just an existence. HASWA provides free prosthetic Artificial Limbs and Calipers to the needy and deserved persons. To date, more than 18,000 People have been benefited by HASWA. Regaining mobility is a critical first step on the long road to recovery for amputees. They can begin to rebuild their lives, transforming a life of dependency on others into a life of increased self-worth and independence.
 
Engr. Dr. Sarmad Shams, Chairperson Biomedical Engineering Department, said that SSUET technical team is working on to make the limbs, which are light, easily adjustable and very mobile. Now the person fixed with limb can hold the empty glass and it will be a great achievement when he will hold a cup and bring it to the mouth.
 
Abdul Hamid Daccani
Dy Director Information

کراچی، 26/ فروری 20121ء ۔ ۔ سر سید یونیورسٹی آف انجینئر نگ اینڈ ٹیکنالوجی اور ہیلتھ اینڈ سوشل ویلفیئر ایسوسی ایشن  ( حسوا HASWA) کے اشتراک سے ایک خودکارمصنوعی ٹانگ تیار کی جارہی ہے جس کی تفصیلات اور اب تک کی کارکردگی کے بارے میں آگاہ کرنے کے لیے ایک سیشن کا انعقاد کیا گیا جس کے شرکاء میں چانسلر جاوید انوار، وائس چانسلرپروفیسر ڈاکٹر ولی الدین کے علاوہ رجسٹرار سید سرفراز علی، اکبر اسماعیل، انجینئر ڈاکٹر سرمد شمس و دیگر شامل تھے ۔

اس موقع پر سرسید یونیورسٹی کے چانسلر جاوید انوار نے کہا کہ ایسے افراد کو دیکھ کر بہت رنج اورتکلیف ہوتی ہے جن کے ہاتھ پیر نہیں ہوتے ۔ تاہم مصنوعی اعضاء اصلی ہاتھ پیر کا نعم البدل تو نہیں ہوسکتے لیکن کافی حد تک معذوری کو ختم کر دیتے ہیں ۔ مصنوعی ہاتھ پیر لگانے سے نہ صرف اعتماد بحال ہوتا ہے بلکہ دوسروں پر انحصار بھی کم ہوجاتا ہے اور وہ اپنا کام کافی حد تک خود کرنے لگتے ہیں ۔ سرسید یونیورسٹی بھی اس کارِ خیر میں حسوا کے ساتھ ساتھ ہے اور خودکار مصنوعی پیر کی تیاری میں یونیورسٹی کے تمام ذراءع اور وسائل بروئے کار لارہی ہے اورحسوا کو ہر قسم کی مدد فراہم کر رہی ہے تاکہ ایک کم لاگت کی خودکار مصنوعی ٹانگ تیار ہوسکے ۔

وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ولی الدین نے کہا کہ جامعات کا کام صرف تعلیم دینا ہی نہیں ہے بلکہ جامعات معاشرے کا ایک اہم ترین جُز ہیں جو معاشرے کی ضرورت کو پورا کر تی ہیں ۔ سرسید یونیورسٹی دیگر اداروں کے ساتھ تعاون اور اشتراک کے ذریعے مختلف شعبوں میں متعدد پروجیکٹس پر کام کر رہی ہے جس سے لوگ مستفید ہوسکیں ۔ سرسید یونیورسٹی کے قابل اور تجربہ کار اساتذہ فکرِ سرسید کے مطابق معاشرے کی تعمیر و ترقی کے لیے طلباء کو جدید تعلیم کے ساتھ ایسی تربیت سے آراستہ کر رہے ہیں جس کی بنیاد اخلاقیات پرہے ۔

حسوا کے اکبر اسماعیل نے کہا کہ صرف زندہ رہنا ہی نہیں بلکہ ایک صحتمند اور خوشگوار زندگی گزارنے کا حق ہر ایک کو حاصل ہے ۔ ہمارا ادارہ ضرورتمندوں کو مصنوعی اعضاء مفت فراہم کرتا ہے ۔ حسوا اب تک اٹھارہ ہزار مصنوعی ہاتھ پیر ضرورتمندوں کو مفت فراہم کرچکی ہے ۔ مصنوعی ہاتھ پیر کا حرکت پذیر ہونا ہی سب سے زیادہ اہم ہے ۔ وہ اپنی زندگی کا دوبارہ آغاز کر سکتے ہیں اور دوسروں پر انحصار کم کر سکتے ہیں اور ان کی خود مختاری اور خودانحصاری میں اضافہ ہوسکتا ہے ۔

شعبہ بائیومیڈیکل انجینئرنگ کے چیئرپرسن انجینئر ڈاکٹر سرمد شمس نے بتایا کہ سرسید یونیورسٹی کی ٹیکنیکل ٹیم ایک ایسی ہلکے وزن کی مصنوعی ٹانگ کی تیاری میں مصروف ہے جسے آسانی سے لگا سکیں اور جو آسانی سے حرکت کر سکے ۔ اب مصنوعی ہاتھ سے آپ ایک خالی گلاس اٹھا سکتے ہیں مگر اصل کامیابی اس وقت ہوگی جب مصنوعی ہاتھ سے چائے کی پیالی اٹھا کر منہ تک لے جایا جاسکے ۔

عبدالحامد دکنی
ڈپٹی ڈائریکٹر انفارمیشن