International Forum For Researchers

SIR SYED UNIVERSITY OF ENGINEERING & TECHNOLOGY
University Road, Karachi-75300, Pakistan
Tel.: 4988000-2, 4982393-474583, Fax: (92-21)-4982393

GCWOT’20 is an International forum for researchers to exchange information regarding novel aspects of technology – Jawaid Anwar, Chancellor SSUET

KARACHI, October 11, 2020 – University of Malaga (UMA), Spain, Mehran University of Engineering & Technology (MUET), Jamshoro, Pakistan, Sir Syed University of Engineering & Technology (SSUET) Karachi, Pakistan, and Riphah International University, Islamabad, Pakistan, jointly organized online GCWOT’20 (Global Conference on Wireless & Optical Technologies) and universities from Europe, Korea, Malaysia, and India have also contributed to the success of this conference.
Three editions of the Conference have already been jointly organized by the University of Malaga, Spain, Mehran University of Engineering & Technology and Sir Syed University of Engineering & Technology with travel grant sponsorship support for Pakistani researchers by the Higher Education Commission of Pakistan. The same troika of UMA, MUET, and SSUET is successfully running International European Commission Credit Mobility Programs under Erasmus Plus. This year, the Riphah International University of Pakistan has also been included in the league as the fourth co-sponsor of the conference.
GCWOT’20 is an International forum for researchers to exchange information regarding novel aspects of technology, application and service development within the multidisciplinary framework of Wireless, Optical and Underwater Communications Technologies. GCWOT aims to facilitate a creative environment for the promotion of collaboration and knowledge transfer.
Appreciating the hard work of the organizers for holding this online Global Conference on Wireless and Optical Technologies in view of the new outbreak of COVID-19 globally, he said that it is the year of the COVID-19 pandemic. This tragic circumstance has prevented the Conference from being held in person, as was the wish of the organizers, who are convinced that the live exchange of ideas is irreplaceable in the universe of scientific and technological research.
He informed that 44 research papers have been presented in 8 technical sessions among which 11 were presented by Sir Syed University. The conference had total 119 submissions with an acceptance ratio of almost 37 percent shows the high quality of accepted papers and all presented papers will become part of the I triple E Digital Library.
He advised the authors that they should try to publish extended versions of their contributions in the impact factor journal linked with the conference and that they should continue their hard work after getting published on the IEEE platform.
Recalling the valuable services of Professor Poncela, Chancellor Jawaid Anwar said, “Mr. Poncela had helped us a great deal in achieving internationalization with the partnerships in the European Union Projects and by offering technical support to many Ph.D. scholars from Pakistan. The Conference organizers have rightly dedicated this edition of the Conference in his memory. Credit goes to Dr. Pablo Otero, Prof. Dr. Vali Uddin, Prof. Dr. Bhawani Shankar Chowdhry, Professor Dr. Enrique Nava and Prof. Dr. Muhammad Aamir, for the success of the event.”
Earlier in his opening speech on behalf of the four universities and the Organizing Committee, TPC Chair and Chairman, Telecommunication Department, SSUET, Prof. Dr. Muhammad Amir, said The GCWOT Conference is a scientific meeting between researchers mainly from two countries, Pakistan and Spain. The desire of the organizers is to open the range to other countries; so we would be very grateful to the participants if they could help to spread the conference among their colleagues from institutions in third countries.
He pointed out that the conference was held under the auspices of the Institute of Electric and Electronic Engineers (IEEE) and the papers presented at this Conference will be archived in the well-known and prestigious IEEE-Xplore database.
Professor Jaime Loret, from the Polytechnic University of Valencia, Spain, delivered a lecture on “Group-based sensor networks for underwater monitoring”.

Abdul Hamid Daccani
Dy Director Information

سر سیّد یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی
یونیورسٹی روڈ کراچی فون نمبرز 34988000-2,34982393-3474583, فیکس : (92-21)-34982393

GCWOT معلومات کے تبادلے، ٹیکنالوجی کی نئی جہتوں کی دریافت کے حوالے سے ایک بین الاقوامی فورم ہے ۔ ۔ چانسلر جاوید انوار ، سرسید یونیورسٹی

کراچی ۱۱/اکتوبر ۰۲۰۲ء: اسپین کی مالاگا یونیورسٹی اور پاکستان کی سرسیدیونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کراچی، مہران یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی جامشورو اور رفاہ انٹرنیشنل یونیورسٹی اسلام آباد کے زیرِ اہتمام وائرلیس اینڈ آپٹیکل ٹیکنالوجیز(GCWOT) کے موضوع پر ایک آن لائن بین الاقوامی عالمی کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں یورپ، ملائشیا، کوریا اور انڈیا کی جامعات نے حصہ لیا ۔

اس سے قبل مالاگا یونیورسٹی، سرسیدیونیورسٹی اور مہران یونیورسٹی وائرلیس اینڈ آپٹیکل ٹیکنالوجیز کے موضوع پر تین مرتبہ عالمی کانفرنس کا انعقاد کرچکی ہیں اور پاکستانی ریسرچرز کے سفری اخراجات کے لیے ہائر ایجوکیشن کمیشن آف پاکستان نے مالی تعاون کیا تھا ۔ یہ تینوں جامعات بین الاقوامی یورپین کمیشن کریڈٹ موبیلیٹی پروگرام Erasmus کے تحت بڑی خوش اسلوبی سے چلا رہی ہیں ۔ اس مرتبہ جامعات کے اس ٹرایءکا میں اسلام آباد کی رفاہ یونیورسٹی بھی شامل ہوگئی ہے ۔

GCWOT معلومات کے تبادلے، ٹیکنالوجی کی نئی جہتوں کی دریافت، وایرلیس اور زیرِآب مواصلاتی ٹیکنالوجیز کے بین الشعبہ جاتی فریم ورک کے اندر بہتری اور اس کے اطلاق کے حوالے سے ایک بین الاقوامی فورم ہے ۔ GCWOT کا بنیادی مقصد علم کی منتقلی اور باہمی تعاون کے فروغ کے ساتھ ٹیکنالوجیز کی ترقی و بہتری اور اس کی وسعت میں اضافہ کے لیے تخلیقی ماحول پیدا کرنا ہے ۔

کانفرنس کے آرگنائزرز کی تعریف کرتے ہوئے سرسید یونیورسٹی کے چانسلر جاوید انوار نے کہا کہ ناگزیر وجوہات کی بناء پر اس کانفرنس کا انعقاد آن لائن کیا گیا جو حقیقی معنوں میں فزیکل کانفرنس کا نعم البدل نہیں ہے کیونکہ سائنٹیفک اور ریسرچ کی دنیا میں براہ راست پیش کئے جانے والے آئیڈیاز کاکوئی نعم البدل نہیں ہوتا ۔ تاہم دنیا بھر میں کرونا کی نئی لہر کے آغاز کی وجہ سے اس آن لائن کانفرنس کا انعقاد قابلِ ستائش ہے ۔

انھوں نے بتایا کہ8 شعبوں میں تقریباََ 44 ریسرچ پیپرز پیش کئے گئے جن میں سے 11 پیپرز سرسیدیونیورسٹی کے ریسرچ اسکالرز نے پیش کئے ۔ اب تک مجموعی طور پر119 پیپرز جمع کئے جاچکے ہیں ۔ منظور شدہ مسودوں کا تناسب37 فیصد ہے جو اس کے اعلیٰ معیار کا ثبوت ہے ۔ انھوں نے مصنف کو کانفرنس سے جُڑے impact امپیکٹ ریسرچ جرنل میں اپنے پیپرز چھپوانے کا مشورہ دیا اور IEEE میں پیپر کی اشاعت کے بعد بھی اپنا کام جاری رکھنے پر زور دیا ۔

پروفیسر پانسلا ;Professor Poncela کی خدمات کو یاد کرتے ہوئے چانسلر جاوید انوار نے کہا کہ Professor Poncela نے یورپی یونین پروجیکٹس میں بین الاقوامی پارٹرشپ کے حصو ل میں سرسیدیونیورسٹی کے بے حد مدد کی اور کئی پاکستانی پی ایچ ڈی اسکالرز کو ٹیکنیکل سپورٹ فراہم کی ۔ اس کانفرنس کو ان کے نام سے منسوب کرکے آرگنائزرز نے بہت اچھا کام کیا ہے ۔ انھوں نے ایک کامیاب کانفرنس کے انعقاد پر سرسید یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر ولی الدین، پروفیسر ڈاکٹر محمد عامر، مہران یونیورسٹی کے پروفیسر ڈاکٹر بھوانی شنکر چودھری، اسپین کے Dr. Pablo Otero ,Professor Dr. Enrique Nava کی کاوشوں کی بے حد تعریف کی ۔

قبل ازیں عالمی کانفرنس پر افتتاحی کلمات اداکرتے ہوئےTPC چیئر اور سرسید یونیورسٹی کے شعبہ ٹیلی کمیونیکیشن انجینئرنگ کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر محمد عامر نے کہا کہ یہ کانفرنس درحقیقت پاکستان اور اسپین کے مابین ایک سائنٹیفک میٹنگ ہے ۔ انھوں نے کانفرنس کے دائرہ کار کو بڑھانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ کانفرنس کے شرکا کو چاہئے کہ تیسری دنیا کی جامعات میں وہ اپنے ساتھیوں کو اس کانفرنس میں شامل ہونے کے لیے آمادہ کریں ۔

اس موقع پر پروفیسر ڈاکٹر محمد عامر نے بتایا کہ یہ کانفرنس IEEE کی زیرِ سرپرستی منعقد کی گئی اور اس کانفرنس میں پیش کئے جانے والے پیپرز کو IEEE Xplore ڈیٹا بیس کی آرکائیو میں شامل کیا جائے گا ۔

اسپین کی پولی ٹیکنیک یونیورسٹی ویلنسیاکے پروفیسر نے Group-based sensor networks for underwater monitoring کے موضوع پرپروفیسر جیمی لوریٹ Professor Jaime Loret نے ایک لیکچر بھی دیا ۔

(عبدالحامد دکنی)
ڈپٹی ڈائریکٹر انفارمیشن